نیب نے شراب کے لائسنس میں اکرم اشرف گوندل کو گرفتار کرلیا

0
104
اکرم اشرف گوندل
اکرم اشرف گوندل

 اکرم اشرف گوندل

سابقہ ​​ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ  اکرم اشرف گوندل کو قومی احتساب بیورو  نیب لاہور نے ایک نجی شخص کو شراب کا لائسنس دینے میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار  کر لیا گیا گرفتاری کے ایک دن بعد آج جمعہ کو احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔ ۔نیب نے ایک بیان میں کہا  ہے کہ انکوائری کی کارروائی کے دوران یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ ملزم اکرم گوندل نے اس اہلیت کے بغیر مذکورہ ہوٹل کو ایل ٹو کیٹیگری شراب کے لائسنس کی فراہمی کے لئے  مکمل سہولت مہیا کی تھی

۔”گوندل کی گرفتاری سابق بیوروکریٹ ، پنجاب کے سابق پرنسپل سکریٹری راحیل صدیقی ، سی ایم بزدار اور دیگر کے خلاف غیر قانونی شراب لائسنس دینے کے الزام میں کی جانے والی انکوائری کا ایک حصہ ہے۔اینٹی کرپشن واچ ڈاگ نے صوبائی دارالحکومت میں نجی ہوٹل میں مبینہ غیر قانونی شراب کے لائسنس کی رہائی میں اختیارات کا ناجائز استعمال اور مبینہ کردار ادا کرکے بدعنوانی کے دعوؤں پر گوندل کو گرفتار کیا ہے ۔نیب لاہور نے بتایا کہ افسر نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا اور ایک نجی ہوٹل کو غیر قانونی طور پر ایل ٹو کیٹیگری کا لائسنس دیا تھا جس کی بنا پر  کڑی تفشیش کے بعد اس کی گرفتاری کی  گئی ہے

  ہوٹل کو لائسنس

اس موقع پر اشرف گوندل کا کہنا تھا کہ  ہوٹل کو لائسنس نہیں مل سکا کیونکہ اس نے یہ شرط پوری نہیں کی تھی کہ پنجاب کے سیاحتی خدمات کے محکمہ سے  چار یا پانچ سٹار ریٹنگ سرٹیفکیٹ حاصل کیا گیا ہے۔قومی احتساب بیورو نے یہ بھی دعوی کیا ہے کہ سابق ڈی جی نے اس معاملے میں دیگر ضروری طریقہ کار اور کوڈل رسمی مراحل پر بھی عمل نہیں کیا تھا نیب نے  مزید کہا  کہ انہوں نے سابقہ ​​ڈی جی کو  کافی شواہد  ملنے کے بعد گرفتار کیا ہے ۱۸ اگست کو سی ایم بزدار نے نیب کو اپنے جواب میں کہا تھا کہ شراب لائسنس کا الزام بے بنیاد ہے۔خدشہ ہے کہ اب اس کیس میں پنجاب کے سی ایم عثمان بزدار کے خلاف بھی گھیرا تنگ کیا جائے گا

مزید پڑھیں : قرآن و حدیث کی روشنی میں علم کی حقیقت اور اہمیت

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here